سعدیہ کار ڈرائیونگ ٹیچر

فرحانہ ناغڑ

اپنے ارد گرد ہمیں بہت سے لوگ نظر آتے ہیں جنھوں نے اپنی زندگی میں بہت سی پریشانیوں کا سامنا کیا ہوتا ہے۔ قدرت کی طرف سے یہ ان لوگوں کے لئے امتحان سمجھا جائے یا پھر ان کی قسمت ، کچھ لوگ اپنے آپ کو حالات سے تنگ آ کر خود کو نقصان پہنچا لیتے ہیں جبکہ کچھ ہمّت سے ہر مشکل کا سامنا کر کے دنیا کو دکھا دیتے ہیں کہ محنت اور سچی لگن سے سب کچھ حاصل کیا جا سکتا ہے ایسی ہی ایک خاتون سعدیہ ہیں جنہوں نے ایک اکیلی عورت ہو کر وہ کر دکھایا جو ہر کسی کے بس کی بات نہیں ۔

سعدیہ ایک متوسط طبقے سے تعلق رکھنے والی ایک معمولی سی لڑکی تھی جن کی زندگی اپنے گھر اور پڑھائی تک محدود تھی پھر اچانک ان کے گھر میں ایک ایسا حادثہ رونما ہو کہ ا ن کے والدرحلت فرما گئے جس سے ان کے گھر کی خوشحالی تہس نہس ہو گئی چونکہ ان کے گھر میں کوئی کمانے والا
نہیں تھا اور دوسرے بہن بھائی بھی زیرِ تعلیم تھے تو انہوں نے اپنے گھر کو سنبھا لنے کا ارادہ کیا اور وقتی طور پراپنی پڑھائی سے دستبردار ہونے کا سوچا اس وقت آپ سوشالاجی میں ماسٹرز کر رہی تھیں ۔ 

پڑھائی چھوڑنے کے بعد نوکری کی تلاش میں سر گردان رہی پر کہیں پر بھی ڈھنگ کی نوکری نہیں ملی جس سے ان کا گھر کا گز بسرہو سکے پھر انہوں نے ایک بلڈر کے پاس اکاؤنٹنٹ کی نوکری کی پر یہ نوکری وقتی تھی اور آمدنی بھی بہت کم ۔ انہوں نے تھوڑی بہت بچت کر کے ایک پرانی کار خریدی جس سے انہوں نے ڈرائیونگ سیکھی پر کچھ مالی مسائل کی وجہ سے کاربیچنی پڑی ،مگر انہوں نے ہمّت نہیں ہاری اور ایک ڈرائیونگ سینٹر میں کام کرنے لگیں،اس کے ساتھ ہی وہ لوگوں کے لئے ڈرائیونگ بھی کرنے لگیں مگر ادار ے کے لوگ ان کے اس اقدام سے متفق نہیں ہوئے اسی لئے انہوں نے وہ ادارہ چھوڑ کر پرائیویٹ کام کیا اور اسی محنت و لگن سے انہوں نے ایک ڈرائیونگ اسکول کھولا جس میں وہ باقاعدہ کلاسسز بھی دے ر ہی ہیں 

آج وہ اپنی زندگی کو ایک کامیاب طریقے سے گزار رہی ہیں، انہوں نے یہ بات ثابت کردی کہ اگر انسان میں ہمت، طاقت اور حوصلہ ہو تو وہ کسی بھی مشکل کا سامنا بہادری سے کر سکتا ہے خواہ وہ مرد ہو یا عورت ۔سعدیہ کی پرانی زندگی کو دیکھ کر ہم یہ اندازہ لگا سکتے ہیں کہ اتنی مشکلوں اور پریشانیوں کے بعد بھی وہ ثابت قدم رہیں ۔سعدیہ کی زندگی ان تمام لوگوں کے لیے ایک نمونہ ہے جو پریشانیوں کے سامنے جھک کراور ان سے ہار کر کوشش کرنا چھوڑ دیتے ہیں جوان کی آگے کی زندگی کے لئے مفید نہیں ہوتا۔